What My Text Book Says

23rd March Special !

The Way I Think

An internally displaced boy attends school at the UNHCR Jalala camp in Mardan district

While going through my Pakistan Studies text book today few sentences caught my attention, those few sentences which I have been rote learning since grade one. But today they looked really different to me as if it’s my first time reading them, it felt really hard understanding them. The paragraph was about why we wanted a separate homeland? What was the ideology of Pakistan? My text book answered these questions by saying “The definition of Pakistan’s ideology is that Muslims should have a state where they have the opportunity to live according to their faith and creed based on the Islamic principles. They should have all the resources at their disposal to enhance Islamic culture and civilization because this was the sole purpose of demanding a separate homeland for the Muslims”. After reading these lines a few questions rose in my mind.
Is that really so? After getting a piece…

View original post 940 more words

مثبت خیالات کا ایندھن

The Way I Think

ہمیں ہمیشہ چھوٹی چھوٹی ترغیبی باتوں کی ضرورت ہوتی ہے جو ہماری آگے بڑھنے میں مدد کرسکیں. ہمیں ہمیشہ ایسے قول پڑھنے چاہیے جس سے اچھے کام کرنے کا جذبہ بڑھے. ہر بڑے کام کا آغاز کسی چھوٹے منصوبے سے ہوتا ہے اور منصوبے عموماً چھوٹی باتوں سے یا لوگوں سے متاثر ہو کر بنتے ہیں. اب آپ کو یہ اوپر کی سطریں پڑھ کر یہی لگ رہا ہوگا کہ یہ باقی سب آرٹیکلز کی طرح کوئی گھسا پٹا آرٹیکل ہے. جس میں زندگی میں آگے بڑھنے اور کچھ کرنے کی تقریر ہوگی اور مایوسی سے نجات پانے کے طریقے بتاے جایئں گے، تو آپ کو بلکل صحیح لگ رہا ہے. یہ واقعی ایسا ہی آرٹیکل ہے لیکن یہ آرٹیکل ان تمام آرٹیکلز کے بارے میں ہے جنھیں ہم انگریزی زبان کا لفظ “Cliché”( گھسا پٹا یا مبتزل طرز کی چیز) کہہ کر نظرانداز کر دیتے ہیں، اور آگے بڑھ…

View original post 609 more words

امن کا راز

The Way I Think

یہ جاننا  بہت ضروری ہے کہ ایک انسان کو  خوش ہونے کے لئے ، ایک خوشگوار خاندان ہونے کے لئے یا ایک خوشگوار معاشرے کے لئے ایک اچھا دل ہونا بہت ضروری ہے . دنیاوی امن انسان کے اندرونی سکون سے پیدا ہوتا ہے . امن  کا مطلب یہ نہیں کے عدم تشدد ہو تو امن ہے بلکے امن کا مطلب ہے انسانی ہمدردی ظاہر کرنا

ہم عارضی خوشی کو خوش ہونا کہتے ہیں اور اس خوشی کے ختم ہوتے ہی ماتم کرنا شروع کر دیتے ہیں . اصل خوشی انسان کا اندرونی سکون ہوتی  ہے جو برے حالت میں بھی خوش رہنے سے ہوتی ہے . دوسروں کی طرف ہمدردی دکھانے سے دوسروں کی خوشی میں خوش ہونے سے ہی سکون ملتا ہے اور اپنے ساتھ ہم دوسروں کو بھی خوش رکھتے ہیں۔

اس سے پہلے اپنے گھر میں  پھر معاشرے میں خوشی، امن اور سکون پھیلنے لگتا ہے…

View original post 139 more words